بچپن کی تصاویر

چلئیے، چلتے ہیں اپنے بچپن میں

image

جب آپ ایک بچے ہوتے ہیں تو آپ کی پہلی خواہش بڑا ہو جانا ہوتی ہے. حالانکہ جو پہلے ہی بڑے ہیں وہ آپ کو بتاتے ہیں کہ آپ کتنے خوش قسمت ہیں کیونکہ آپ ایک بچے ہیں اور اگر ان کا بس چلے تو وہ وقت کے اسی لمحوں میں واپس پہنچ جائیں جب وہ خود بچے تهے چاہے ایک دن کے لئے ہی سہی..!!
ایک بچے کا بچپن بہت سحرانگیز دور ہوتا، ہر دن کچھ نیا تجربہ حاصل ہوتا ہے اور معاشرے کے تمام اصول و قواعد کی ذرا بهی اہمیت اور وقعت نہیں ہوتی…اپنے ہاتھ گندے کرنا ہوں یا اتنا ہنسنا اور قہقہے لگانا کہ پیٹ درد کرنے لگے.
بچوں کے چہروں پہ چهلکتی خوشیاں اور معصومیت ہماری اس قدرتی دنیا کی حقیقی خوبصورتی ہیں.
ان تصویروں میں دنیا کے مختلف خطوں سے ایسے بچوں کی زندگی کے چند مناظر عکس بند کئے گئے ہیں جن کے پاس چاہے جیسے بهی ذرائع دستیاب ہوں وہ اسی سے اپنے وقت کو خوبصورت بنائے لیتے ہیں.
لطف اٹهائیے بچوں کی زندگی کے ان لمحات کا جن میں سے آپ کا بچپن بهی ایسی ہی کسی تصویر کا حصہ رہا ہو گا..!!

انڈیا

انڈیا میں دولت مند گهروں کے بچے بهی ویسی ہی زندگی گزارتے ہیں جیسے کسی بهی مغربی ملک میں رہنے والے خوشحال گهر کے بچے کار یا بس سے سکول اور سونے سے پہلے ٹی وی کے سامنے وقت گزارتے ہیں.
غریب بچوں کے ساتھ عموماً ” اچهوت” سا سلوک کیا جاتا ہے، انہیں سکول کی تعلیم میسر نہیں اور اعلیٰ ذات کے انسان انہیں اپنے بچوں کے پاس بهی نہیں پهٹکنے دیتے.
اس عدم مساوات کے باوجود وقت عازم سفر ہے.!!

گهانا

image

تمام بچے صرف ایک اچهے وقت کی خواہش رکهتے ہیں اور انہیں ایسا کرنے سے روکنے والا کوئی نہیں ہے. اگر ان کے پاس ایک فٹ بال نہیں ہے اور اسے خریدنے کے لئے پیسے نہیں تو کیا ہوا ان بچوں کے لئے فٹ بال کا گول یا چوکور ہونا بهی لازمی نہیں ہے. 

انڈونیشیا

شاید آپ کا بچپن ایک پالتو بلی یا کتے کے ساتھ کهیلتے گزرا ہو، لیکن پالتو بهینس کے ساتھ بهی کهیلنے کے بارے میں کیا خیال ہے. انڈونیشیا میں بچے تقریباً ہر قسم کے جانوروں سے کهیلتے نظر آتے ہیں

ویتنام

image

ویتنام کے 44% فیصد بچے پانی سے پیدا ہونے والی بیماریوں کا شکار ہونے کی وجہ سے جسمانی طور پہ کمزور ہیں , لیکن کهیلتے وقت بچوں کے چہروں پہ شرارتی مسکراہٹ برقرار رہتی ہے ..!!

روس

image

روس میں ایک چهوٹی بچی اپنی بلی کے ساتھ مچهلیاں پکڑنے آئی ہوئی ہے، مجهے سمجھ نہیں آرہی کہ کون اپنے شکار کو پکڑنے میں زیادہ مگن ہے بلی یا چهوٹی بچی..!!

برکینا فاسو

image

ایشیائی اور مغربی دنیا میں دوسروں پہ بالادستی قائم کرنے کا  عمومی رجحان پایا جاتا ہے، لیکن ہم خود نہیں جانتے کہ کیا واقعی ہم زندگی کی حقیقی خوشیاں حاصل کر رہے ہیں یا یہ صرف ہمارا وہم ہے. اس تصویر میں بچوں کو دیکهنے کے بعد آپ فیصلہ کر سکتے ہیں کہ حقیقی خوشی کہیں بهی کسی بهی جگہ رہتے ہوئے حاصل ہو سکتی ہے چاہے آپ اس سیارہ زمین کی ویران جگہوں کے رہائشی ہی کیوں نہ ہوں. بس آپ کو ایک ربڑ کے پرانے ٹائر کی ضرورت پڑے گی.

میان مار

image

یہ بچے بدها کے روایتی علاقائی لباس پہنے ہوئے ہوئے فٹ بال کهیلنے میں مشغول ہیں.
ان کا جوش بدها کے اس قول کی طرف اشارہ کرتا ہے کہ ” جو جتنی کاری ضرب لگائے گا جیت اسی کا نصیب ہو گی” ..!!

یوگنڈا

image

جہاں ایک طرف یوگنڈا مناسب وسائل اور مالی حالات بہتر ہیں وہیں خانہ جنگی اور دیگر جنگی نقصانات سے بهی بهرا پڑا ہے. ان بچوں کو دیکهیں جو گهاس کے میدان میں بال کو ضرب لگانے کے کهیل میں اس طرح مگن ہیں جیسے چند لمحوں کے لئے ہی سہی انہوں نے تمام ملکی مسائل اور جنگ کو خود سے کہیں دور منتقل کر دیا ہو..!!

تاجکستان

image

یہ بچے نہاتے وقت ہر ایک لمحے سے لطف اندوز ہو رہے ہیں، کوئی فرق نہ پڑتا اگر یہ اس کے باہر ہوتے، لیکن تینوں کا مل کے ایک پرانے زنگ آلود میں شراکت داری سے ان کے چہروں پہ ناچتی خوشی سے ایسا محسوس ہوتا ہے جیسے یہ کسی بڑے تالاب میں نہا رہے ہوں.

تهائی لینڈ

تهائی لینڈ میں بہت سے خوبصورت قدرتی مناظر دیکھنے کو ملتے ہیں جو کہ بچوں کے کهیلنے کی بہت سی خوبصورت جگہیں فراہم کرتے ہیں. کچھ بچے بہتر اور محفوظ زندگی گزارتے ہیں جبکہ بہت سوں کو انسانی سمگلنگ کا خطرہ موجود رہتا ہے.

جنوبی افریقہ

This slideshow requires JavaScript.

ہاتھ سے بنائی گئی بچوں کی کار اور پیلی رسیاں جنوبی افریقہ کے ان بچوں کو کھیلنے میں مصروف رکهتے ہیں جنہیں بنانے کے لئے انہیں اپنے کاٹھ کباڑ کا استعمال کرنا پڑتا ہے.

اٹلی

image

اٹلی میں بچے اپنا فارغ وقت پانی سے بڑے بلبلے بنانے کا کهیل کهیلنے میں مگن ہیں

امریکہ

image

امریکہ میں جہاں موبائل فون اور کمپیوٹر زندگی کے دن  گزارنے کے طریقے بتاتے ہیں وہاں بچوں کے ڈگمگاتے قدموں کی یہ تصویر دل کو چهو جانے والی لگی ہے،
جس میں بچے صرف بچے ہی ہیں.

اسرائیل

This slideshow requires JavaScript.

ایک ایسی جگہ جہاں ہر وقت سیاسی اور مذہبی ڈرامے چلتے ہی رہتے ہیں، لیکن وہاں بچے ان سب باتوں سے آزاد اپنی سادہ، پرلطف و پرمزاح زندگیوں کے مزے لوٹتے ہیں

ایتھوپیا

image

ایتھوپیا کے یہ دو بچے بانس کے ڈنڈوں پر پیر رکهے چل رہے ہیں اور اسے ہی اپنے روزمرہ کهیلنے کا سامان بنائے ہوئے ہیں، ایک ایسی جگہ کے رہنے والے جہاں بمشکل زندگی سانس لیتی ہے ،  جہاں کوئی سامان میسر نہیں بچے اپنے کهیلنے کا سامان ڈهونڈ ہی نکالتے ہیں،
ایک ایسی خوبی جس کا بڑے ہونے کا بعد ہم استعمال کرنا چهوڑ دیتے ہیں.!!

اس تحریر کے لئے Earth Porn کی ویب سائٹ سے استفادہ کیا گیا..!!

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s