صفحہء اول

اردو سائنس بلاگ کی تحاریر
|| ٹیکنالوجی || کائنات || معلومات عامہ || تاریخ || معلوماتی کتب || اقوالِ زریں || عجیب و غریب || اس بلاگ کے بارے میں || Facebook ||

40:فری تهنکنگ اور ہمارا غیر سائنسی معاشرہimage
میں سمجھتا ہوں کہ: “فکری غلامی سے جسمانی غلامی بہتر ہے۔”
کسی مخصوص نظریے پر قیام کرنا ایسا ہی ہے جیسے مثال کے طور پر ایک گڑھے میں پانی کھڑا ہو جاتا ہے اور باہر آنے جانے کا کوئی راستہ نظر نہیں آتا جس سے اس میں تعفن، بدبو اور غلاظت پیدا ہو جاتی ہے
تفصیل کے لئے کلک کیجئے
—-===================—-

39:
ہم رنگ کیسے دیکهتے ہیں؟
image
جب ایک چیز ہمیں سفید نظر آئے گی وہ اصل میں روشنی کی تمام طول موج واپس پلٹ رہی ہوتی ہے اور اس وقت ہمیں کوئی چیز کالی نظر آئے گی جب وہ چیز تمام طول موج جذب کر لے گی
تفصیل کے لئے کلک کیجئے
—-====================—-

38:سٹیم سیل ایک عظیم خلیہ کیوں ہے؟
image
سٹیم سیل جو کہ زندگی کا بہت بڑا شاہکار ہے، یہ کلون کیے گئے ایمبریو سٹیم سیل کے لیے ایک بنیاد کے طور پر استعمال کیے گئے تھے جس کی مدد سے دل کے پٹھے، ہڈیاں، دماغ کے ٹشو اور انسانی جسم میں کسی بھی قسم کےسیل بنائے جا سکتے ہیں
تفصیل کے لئے کلک کیجئے
—-====================—-

37:چشم عشق
image
خدمتگار آنکھیں،ہنرمند آنکھیں، جنگجو آنکھیں،عالم آنکھیں،سمجھدار آنکھیں، عبادت گزار آنکھیں،بادشاہ آنکھیں
ایک عام مرد سال میں اوسطاً چھ سے آٹھ ملین مرتبہ پلک جھپکتا ہے، خواتین مردوں سے دگنا پلک جھپکتی ہیں.
تفصیل کے لئے کلک کیجئے
—-===================—-

36:جگنو کی مشعل کیسے جلتی ہے؟
image
جگنو کی دم سے نکلتی روشنی یہ دیکهنے میں کچھ جادوئی سے لگتی ہے، کیا آپ بهی جگنو  کے بارے میں ایسا تو نہیں سوچتے؟
تفصیل کے لئے کلک کیجئے
—-====================—-

35:
جیلی فش جو مرتی نہیں…!!
image
آج سے 4,000 سال قبل اتناپشتم نے گلگامش کو بتایا تها کہ امر ہونے کا راز سمندر کی تہہ میں پائے جانے والے ایک مرجان میں قید ہے، آخر کار 1988ء میں انسان نے سمندر کے تہہ میں ہی ابدی زندگی کا وجود رکهنے والے ایک جاندار کو دریافت کر لیا
تفصیل کے لئے کلک کیجئے
—-===================—-
34:جنات کیا ہیں؟
image
انفراسائونڈ وہ آواز کی لہریں ہیں جن کی فریکیونسی 20 ہٹز سے کم ہے۔ انسان صرف 20000 ہٹز تک کی آوازیں سن سکتا ہے۔ اس سے کم کی آواز کو وہ سن نہیں سکتا انہی خاموش آوزوں کو انفراسائنوڈ کہا جاتا ہے
تفصیل کے لئے کلک کیجئے
—-===================—-

33:ستارے کیسے بنتے ہیں؟
image

امریکہ میں 1910ء میں پہلی بار ایٹم کے ٹکڑوں پر اور ایٹموں کو ٹکرانے کا تجربہ کیا گیا
کچھ سو سال پہلے سائنسدان نہیں جانتے تھے کہ ستارے نیوکلئیر فیوژن کا مجموعہ ہیں اور پچاس سال پہلے وہ یہ بهی نہیں جانتے تهے کہ کائنات میں آج بهی مسلسل نئے ستارے تخلیق ہو رہے ہیں
تفصیل کے لئے کلک کیجئے
—-====================—-

32:
نظریہ ارتقاء کیا ہے؟
image
اگر ہم آج کے دور سے کچھ ہزار سال پیچھے جائیں تو پتا چلتا ہے کہ موجودہ نسل کے مختلف اقسام کے خوبصورت کتے اصل میں بھیڑیوں کی نسل سے ہیں جنہیں انسانوں نے افزائش نسل میں چن چن کر اسے آگے بڑھایا
تفصیل کے لئے کلک کیجئے
—-===================—-

31:
سائنس، معاشرہ اور ہم..!!
image
کوئی ایجاد آخری اور مکمل نہیں ، کوئی علم آخری اور مکمل نہیں، اسلئے کہ کائنات خود مکمل نہیں -اعتراض اور اختلاف کرتے رہو ، اس نیّت سے کہ علم بڑھتا رہے  وہ علم جس کی تصدیق دنیا کا ہر شخص کرے ، وہ علم جو زندگی کی بقا اور مسرّت کے اوزار ایجاد کرتا رہے
تفصیل کے لئے کلک کیجئے
—-===================—-

آخری صفحے پر جائیں 6 || 5 || 4 || 3 || 2 || 1 ||

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s