گهر لے آئیے اپنا ڈرون

’اب آپ بھی ڈرون اڑا سکیں گے‘

image

وائرلیس مصنوعات بنانے والی کمپنی پیرٹ نے ایک ڈرون متعارف کروایا ہے جس کا مقصد اسمارٹ فون یا ٹیبلٹ استعمال کرنے والوں کو فضائی مناظر دیکھنے کی سہولت فراہم کرنا ہے۔

پیرٹ کے مطابق اس کا بیبوپ ڈرون دراصل ایک اعلیٰ معیار کا اڑتا ہوا کیمرا ہے جو رواں برس کی آخری سہ ماہی میں فروخت کے لیے پیش کر دیا جائے گا۔

یہ کمپنی آٹو موبائلز اور دستی موبائل ڈیوائسز کے لیے وائرلیس مصنوعات تیار کرتی ہے۔

یہ ڈرون گزشتہ ہفتے گیارہ مئی کو سان فرانسسکو میں ذرائع ابلاغ کے سامنے پیش کیا گیا۔

image

اس موقع پر پیرٹ کے بانی اور سربراہ اونری سیدو کا کہنا تھا: ’’یہ ایک ایسا تجربہ ہے جیسے آپ ایک پرندے یا کیڑے ہوں۔‘‘
انہوں نے مزید کہا: ’’آپ اس آلے کے ذریعے اڑتے ہیں اور چیزوں کو ایک پرندے کی نظر سے دیکھتے ہیں۔‘‘

بیبوپ ڈرون کو ایپل یا اینڈرائیوڈ سافٹ ویئر کے حامل اسمارٹ فون یا ٹیبلٹ کمپیوٹر کی مدد سے کنٹرول کیا جا سکتا ہے جبکہ اس کے ہائی ڈیفینیشن کیمرے کی آنکھ سے مناظر اسی اسمارٹ فون یا ٹیبلٹ کے اسکرین پر 180 ڈگری (فِش آئی ویو) پر دکھائی دیتے ہیں۔ اس ڈرون میں نصب کیمرے میں موشن اسٹیبلائزر کی خصوصیت بھی رکھی گئی ہے۔

image

بیبوپ ڈرون کو اسمارٹ فونز اور ٹیبلٹ کمپیوٹر کے ذریعے کنٹرول کیا جا سکتا ہے
اس ڈرون کا ہدف ایسے صارفین ہیں جو اسمارٹ فونز یا ٹیبلٹ کمپیوٹرز سے بنائی گئی فلموں میں فضائی مناظر بھی شامل کرنا چاہتے ہیں۔
بیبوپ ڈرون کو موبائل ڈیوائسز کے ساتھ وائی فائی کنیکشن کے ذریعے منسلک کیا جاتا ہے اور اس کی رینج تقریباﹰ 980 فِٹ (تین سو میٹر) ہے۔
پیرٹ کے مطابق موبائل ڈیوائسز کے لیے علیحٰدہ سے ایک اسکائی کنٹرولر ڈوک فروخت کیا جائے گا جو ڈرون کی رینج دو کلومیٹر تک بڑھا دے گا۔
سیدو کا کہنا ہے کہ جی پی ایس خصوصیت کے بدولت ڈرون خود کار طریقے سے اسی مقام پر واپس لوٹنے کی صلاحیت بھی رکھتا ہے جہاں سے اس نے اڑان لی ہو۔ اس ڈرون کا وزن ایک کلوگرام ہے۔ سان فرانسسکو میں تعارفی تقریب کے موقع پر اس کا ایک عملی نمونہ بھی پیش کیا گیا۔
خبر رساں ادارے اے ایف پی کے مطابق اس ڈرون کو اس طرز پر بنایا گیا ہے کہ یہ بند مقامات اور کھلی فضاؤں، دونوں جگہوں پر ہی پرواز کر سکتا ہے۔

image

بی پاپ ڈرون کا یہ ماڈل اپنے پچهلے ماڈل سے سادہ ،خوبصورت اور پائیدار ہے اور ذاتی استعمال کے لئے مفید ہے، اس کا کیمرہ 14 میگا پکسل HD ہے.

اس ڈرون میں جی پی ایس کی سہولت موجود ہے. فری فلائٹ 3.0 سافٹ ویئر کی مدد سے آپ بذریعہ وائی فائی بی پاپ ڈرون کو اپنے اینڈرائیڈ ، ایپل فون  اور آئی پیڈ سے مکمل کنٹرول کر سکتے ہیں.. ڈرون کے کیمرے سے موبائل پہ ویڈیو سٹریمنگ وائی فائی کے ذریعے موصول کر سکتے ہیں.

اس  سے ریکارڈ کی گئی ویڈیو اس کی اپنی 8 گیگا بائٹ میں سٹور ہوتی ہے جسے بعد میں آپ اپنے کمپیوٹر اور موبائل پر دیکھ سکتے ہیں.

image

ڈرون کے اندر موجود جی پی ایس کی سہولت سے ڈرون اور ایمرجنسی کی صورت میں ڈرون اسی جگہ واپس آ جاتا ہے جہاں سے یہ اڑایا گیا ہو.

اس سال 2014 کے آخر تک یہ ڈرون مارکیٹ میں عام صارف تک پہنچایا جائے گا. قیاس ہے کہ اس کی قیمت 300$ تک ہو گی..!

یہ تحریر ڈوئچے ویلے اردو سے لی گئی ہے

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s